Kite runner by Khalid Hussaini

اس ناول کے مصنف خالد حسینی ہیں جن کا تعلق افغانستان سے ہے لیکن اب طویل عرصے سے امریکہ میں مقیم ہیں۔ افغانستان، افغانی کلچر وغیرہ کے بارے میں جاننے کے بارے میں ایک اچھا تفصیلی ناول ہے۔۔ ناول کی کہانی افغانستان کے آخری تین چار عشروں کے حالات کی اچھی عکاسی ہے اور عام انسانوں کی زندگی پہ پڑنے والے اثرات پہ تفصیلی روشنی ڈالتی ہے۔

ناول بیسٹ سیلر ہے، اچھے انداز سے گیا ہے لیکن بہت سلو اور طویل ہے۔ ایک موقع پہ آ کے بوریت محسوس ہونے لگتی ہے۔۔۔

ناول میں افغانستان پہ روس کے حملے سے پہلے کے خوشحال حالات اور جنگ کے نیتجے میں ہونے والی ایک بہت بڑی انسانی حجرت، اس کے بعد بے گھر افغانیوں کی امریکہ میں زندگی کے بارے میں تفصیلی منظر کشی کی گئی ہے۔ طالبان دور کے حالات بھی مصنف نے قلم بند کئے ہیں۔

اس ناول کے بیسٹ سیلر ہونے کی بہت سی وجوہات میں ایک وجہ یہ ہے کہ اس میں طالبان، افغانستان کی ویسی ہی تصویر کشی کی گئی ہے جو اہل مغرب کے لئے قابل قبول ہے۔ طالبان کے طریق کار اور مظالم وغیرہ کے بارے میں جتنی تفصیل اس ناول میں موجود ہے وہ غیر ضروری اور بھرتی کی محسوس ہوتی ہیں۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ان تفصیلات کو اس وجہ سے شامل کیا گیا ہے کیونکہ تصویر کا صرف یہی رخ امن کے علمبرداروں کے لئے قابل قبول ہے۔ بہت سے لوگ اسلام، طالبان اور دہشت گردی کو مکس کرتے ہیں اور ایسی تفصیلات سے ذہن پہ اچھا اثر نہیں پڑتا۔

اس کے باوجود یہ ناول افغان مہاجرین کی حالت ذار پہ اچھی روشنی ڈالتا ہے اور قاری کو یہ باور کرا دیتا ہے کہ ایک افغان شخص کی زندگی پھولوں کی سیج نہیں ہے۔

اسی ناول کے اردو ترجمہ "کفارہ” پہ جنگ سنڈے میگزین میں شین عین صاحب کا تبصرہ ملاحظہ کیجئے۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

The Kite Runner پہ ایک اور تبصرہ پڑھیں۔

Advertisements

4 comments on “Kite runner by Khalid Hussaini

  1. ناول ہزارہ لوگوں کی حالت زار پر بھی توجہ دلاتا ہے جبکہ اصل بات وہی ہے کو جو مغرب کو چاہیے وہ لکھا گیا ہے لیکن اس ناول میں لکھے گئے واقعات کوئی اتنے انہونے بھی نہیں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s