تخیل سے حقیقت

تخیل سے حقیقت

تمام تخلیقات مجازی ہیں کہ اصل خالق بس ایک ذات ہے۔

******

ایک مجسمہ ساز کو پتھر اور ہتھوڑی دے دیں، وہ اس میں چھپی مورتی نکال دے گا۔۔۔

ایک مصور کو کینوس اور رنگ دے دیں، وہ رنگوں کو تصویر کا روپ دے دے گا۔۔۔

ایک مصنف کو قلم دے دیں اور وہ تحریر لکھ کے پیش کر دے گا۔۔۔

مورتی ہو، تصویر ہو یا پھر تحریر۔۔۔۔ یہ ہمیشہ سے موجود ہیں۔ لیکن پردوں میں ہیں، چھپی ہوئی ہیں۔۔ انہیں اندر سے باہر نکالنے اور سب کے سامنے پیش کرنے کا کام مجسمہ ساز، مصور اور مصنف کا ہے۔ پڑھنا جاری رکھیں

Advertisements

اتفاقات۔۔۔؟

اتفاقات۔۔۔؟

زندگی اتفاقات کا مجموعہ ہے۔

کسی نے کہا کہ اتفاقات پہ لکھو۔ اسی مقصد کے لئے اوپر والا جملہ لکھا ہے اور اس کے بعد۔۔۔۔ شاید ایک فل اسٹاپ۔۔۔ یعنی بات ختم۔

ایسا نہیں کہ مجھے اتفاقات پہ لکھنا نہیں آ رہا بلکہ میرے سامنے یہ سوال آ کھڑا ہوا ہے کہ کیا میں اتفاقات پہ یقین رکھتی ہوں۔۔۔؟ پڑھنا جاری رکھیں

میٹھے بول میں جادو ہے۔

میٹھے بول میں جادو ہے۔
لیکن میٹھے سے تو شوگر ہو جاتی ہے۔
پھر بھی زیادہ تر لوگوں کو میٹھا پسند ہوتا ہے۔
اسی لئے زیادہ تر لوگ شوگر کی بیماری میں مبتلا ہیں۔ پڑھنا جاری رکھیں

فئیر ویدر

فئیر ویدر

(یہ تحریر رافعہ خان کی تحریر "فئیر ویدر” سے متاثر ہو کے لکھی گئی ہے)

اپنے گھر سے ہونیورسٹی جانے کے لئے روز مجھے بس لینی پڑتی ہے۔ بس کا پک اپ پوائنٹ میرے گھر سے کچھ فاصلے پہ ہے۔ اس پوائنٹ تک پہنچنے کے لئے دو راستے ہیں۔ ایک صاف ستھری پختہ سڑک ہے، لیکن پیدل چلنے والوں کے لئے یہ نسبتاً لمبا راستہ ہے۔ دوسرا راستہ پگڈنڈی نما ہے، یعنی کچا۔ یہ راستہ گھروں کی پچھلی طرف سے نکلتا ہے۔ اگرچہ یہ پگڈنڈی نما ہے لیکن چوڑی پگڈنڈی ہے، ساتھ ہی یہ مکمل کچا بھی نہیں ہے، کچا نما ہے۔

کچا نما۔۔۔۔؟ پڑھنا جاری رکھیں

تصویر کے رخ

زیادہ تر لوگوں نے تصویر کے دوسرا رخ دیکھنے والی کہانی سنی ہوگی یا پھر پڑھی ہوگی۔ یہاں میرا مقصد پرانی اور پہلے سے جانی بوجھی ہوئی بات کو دہرانا نہیں ہے بلکہ اس پیغام کو سمجھنا ہے جو اس مثال سے سامنے آتا ہے یعنی معاملے کے صرف ایک پہلو کو دیکھ کر رائے نہیں بنانی چاہئے کہ یہ سچائی اور انصاف کے خلاف ہے۔ پڑھنا جاری رکھیں

سائنس اور باری تعالیٰ کی کبریائی

سائنس اور باری تعالیٰ کی کبریائی

تحریر:  سمارا 

فرما دیجئے اگر سمندر میرے رب کے کلمات کے لئے روشنائی ہوجائے تو وہ سمندر میرے رب کے کلمات کے ختم ہونے سے پہلے ہی ختم ہوجائے گا اگرچہ ہم اس کی مثل اور (سمندر یا روشنائی) مدد کے لئے لے آئیں۔ (الکہف: 109)

اور اگر زمین میں جتنے درخت ہیں (سب) قلم ہوں اور سمندر (روشنائی ہو) اس کے بعد اور سات سمندر اسے بڑھاتے چلے جائیں تو اﷲ کے کلمات (تب بھی) ختم نہیں ہوں گے۔ بیشک اﷲ غالب ہے حکمت والا ہے۔ (لقمان: 27) پڑھنا جاری رکھیں

بچوں کے ساتھ وقت گزارنے کی اہمیت— ایک امریکی ماں کی نظر سے

ترجمہ و تلخیص: سمارا

اس مضمون کی مصنفہ Tennille Webster ہیں۔ مختلف انٹر نیٹ سائٹس پر آپ کے مضامین چھپتے رہتے ہیں۔


مصنفہ اپنی بیٹی کے ساتھ

میں اپنے وقت کا زیادہ تر حصہ اسی اسکرین کے سامنے گزارتی ہوں جس کے آگے میں ابھی بھی موجود ہوں۔۔۔ یہ ایک چھوٹی سی دس انچ کی ایل سی ڈی اسکرین ہے۔ اس اسکرین اور میرے بچوں میں کچھ بھی مشترک نہیں ہے۔ یہ میرے بچوں کی مماثلت صرف اسی وقت اختیار کرتی ہے جب میں ان کی تصویریں دیکھ رہی ہوں۔ کام کے اوقات میں بچوں کی تصویریں دیکھتے ہوئے مجھے احساس جرم ہوتا ہے کہ میں کام کی بجائے کچھ اورکر رہی ہوں۔ گویا جس وقت کی مجھے تنخواہ ملتی ہے اس وقت میں کام کی بجائے اپنے بچوں کی تصویریں دیکھنے میں مشغول ہوں۔ میری نظر میں یہ اپنے کام اور ذمہ داری کے ساتھ بے ایمانی ہے۔ مجھے کام دینے والوں نے یہ سوچ کر مجھے نوکری دی ہے کہ میں بہتر طریقے سے اپنی ذمہ داری انجام دوں گی لیکن حقیقت میں، میں کام کی بجائے کمپیوٹر اسکرین پر اپنے بچوں کی تصویریں دیکھنا پسند کرتی ہوں۔

لیکن میں کام کرتی کیوں ہوں؟ پڑھنا جاری رکھیں

صرف درست ٹیوننگ کی ضرورت ہے۔۔۔ جنگ سنڈے میگزین 12 جون 2011

السلام علیکم

میرا یہ مضمون آج کے جنگ سنڈے میگزین میں شامل ہوا ہے۔ آپ لوگوں کے لئے یہاں شئیر کر رہی ہوں۔ پڑھنا جاری رکھیں

ٹیوننگ(Tuning)

ٹیوننگ(Tuning)

گھر بیٹھے بیٹھے دنیا بھر کے حالات سے واقف ہونا ایک ایسی عیاشی ہے جو گزشتہ صدی سے پہلے ممکن نہیں تھی۔ پہلے زمانے میں لوگ دوسرے علاقوں سے آنے والے مسافروں کا انتظار کرتے تھے جو آ کے انہیں ان دیکھی جگہوں کی باتیں بتائیں، دور دراز کے قصے سنائیں۔ اِن اَن دیکھی داستانوں میں بڑی کشش ہوتی تھی اور لوگ عرصے تک ان کے سحر میں مدہوش رہتے تھے۔ تخیلات کی ایک دنیا آباد تھی جہاں دور دیشوں میں دودھ کی نہریں بہتی رہتیں اور بیش قیمت جواہر راہوں میں عام پڑے ہوتے۔ پڑھنا جاری رکھیں

بلیک ہولز۔۔۔ جنگ سنڈے میگزین 28 نومبر 2010

السلام علیکم

میرا یہ مضمون اس ہفتے کے جنگ سنڈے میگزین میں شامل ہوا ہے۔ آپ لوگوں کے لئے یہاں شئیر کر رہی ہوں۔ پڑھنا جاری رکھیں